21 Ramzan Noha 2020 | Faqat Ali Hai | Syed Muhammad Shah | Shahdat e Imam Ali Noha



21 Ramzan Noha 2020 | Faqat Ali Hai | Syed Muhammad Shah | Shahdat e Imam Ali Noha


امیر ایسا کے جس پہ غربت کی انتہا ہے فقط علی ہے وہ جس میں قتل بتول سہنے کا حوصلہ ہے فقط علی ہے بغیر روئے وہ اپنی دہلیز اور در سے نہیں گزرتا جو قتل گاہ بتول ہر روز دیکھتا ہے فقط علی ہے صدائِیں دیتا ہے کوفے والوں علی سے بدلے ابھی چکالو تمھاری مجرم نہیں ہے زینب ع تمھیں پتہ ہے فقط علی ہے ہے بنتا اس کو غریب کہنا کہ اس کی بیٹی ہے سر برہنہ وہ جس کے بیٹے کو پتھروں کا کفن ملا ہے فقط علی ہے اسے خبر ہے کہ زندگی بھر منا سکے گی نہ عید زینب ع جو نیند سے پھر بھی اپنا قاتل جگا رہا ہے فقط علی یے یہ ضرب ملجم نے کیا کیا ہے کہ خون چہرے پہ بہہ رہاہے وہ جس کے چہرے پہ اس کا نوحہ لکھا گیا ہے نہ دیکھے بابا کی وہ اسیری نہ یاد زینب ع کو شام آئے جو داغ رسی کے بیٹیوں سے چھپا رہا ہے فقط علی ہے یہ راز بے شک ہے راز محسن مگر ہے غربت کا اک حوالہ جنازہ اپنا جو خود لحد میں اتارتا ہے فقط علی ہے


Previous
Next Post »